Tera Ishq Matti Ka Dher Season 2 By Anum Raees

  
Novel : Tera Ishq Matti Ka Dher Season 2
Writer Name : Anum Raees
Mania team has started  a journey for all social media writers to publish their Novels and short stories. Welcome To All The Writers, Test your writing abilities.
They write romantic novels, forced marriage, hero police officer based Urdu novel, suspense novels, best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels , romantic novels in Urdu pdf , full romantic Urdu novels , Urdu , romantic stories , Urdu novel online , best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels
romantic novels in Urdu pdf, Khoon bha based , revenge based , rude hero , kidnapping based , second marriage based,
Tera Ishq Matti Ka Dher Season 2 Novel Complete by 
Anum Raees is available here to download in pdf form and online reading.

$ads={2}
 

دانیال لڑکی والے ہو تم عزت تو تمہیں کرنی چاہیے میری' اس نے پری کو اپنی نگاہوں کے حصار میں لیتے ہوئے کہا اور پھر بڑے آرام سے اس کے ہاتھ اپنے گریبان سے ہٹائے 'ڈاکٹر ضرور ہوں لیکن اگر غصہ آجائے تو کسی کو نہیں چھوڑتا' وہ پری سے چند قدموں کے فاصلے پر کھڑا ہوا اور جیب سے فون نکالا اور حارث کو کال کرکے اندر بلایا پانچ منٹ بعد ہی وہ مولوی صاحب کے ساتھ اندر داخل ہوا تو پری کی جیسے روح کھینچ لی ہو اس سے پہلے وہ گرتی علی نے اسے تھاما 'ممم میں شش شادی نن نہیں کروں گگ گی' پری نے اسکی شرٹ کو مٹھیوں میں جکڑتے ہوئے کہا تو علی کا چہرہ اسپاٹ ہوا تھا 'اگر ایک بات اور مزید منہ سے نکالی نا تو تمہاری جان لینے سے پہلے تمہارے اس خونخوار بھائی کو ماروں گا' وہ صرف ڈرا رہا تھا لیکن وہ لوگ کیا کرتے جو ڈر رہے تھے پری نے اسکی بات پر اذیت سے آنکھیں مینچی 'بتاؤ کروگی نکاح' اس نے اسکی ٹھوڑی پر ہاتھ رکھ کر چہرہ اوپر کیا تو وہ ہاں میں سر ہلا گئی جسے دیکھ کر علی کے چہرے پر مسکراہٹ آئی گہری مسکراہٹ 'اب خاموشی سے مولوی صاحب کو نکاح پڑھانے دیں ورنہ یاد رکھئے گا یہاں کوئی لالہ رخ نہیں ہے جو پری کو بچائے گی مجھ سے' اس نے تنزیہ انداز میں کہا تو سب نے بری طرح پہلو بدلا دانیال نے پھر سے مزاحمت کرنا چاہی لیکن زمان صاحب نے روک دیا 'پریشے شاہ بنتِ زمان شاہ آپکا نکاح علی اسماعیل آفریدی ولد اسماعیل آفریدی سے حق مہر تیس لاکھ سکہ رائج الوقت کیا جاتا ہے کیا آپ کو قبول ہے' تھوڑی دیر بعد مولوی صاحب کی آواز کمرے میں گونجی تھی پری نے مضبوطی سے فصیحہ کا ہاتھ تھاما میر بھی اب علی کے برابر میں بیٹھا تھا 'جلدی پری' علی نے اپنی بات پر زور دیا 'قق قبول ہے' اس کو اس وقت ارشن بے تحاشہ یاد آیا اور پھر علی سے اسکی مرضی پوچھی گئی اور پھر نکاح ہوہی گیا فائنلی (شکر)


Click on the link given below to Free download Pdf It's Free Download Link

Media Fire Download Link
Click Now 

$ads={1}

ONLINE READING


Post a Comment

Previous Post Next Post